دسمبر 12, 2019

دعوت، حملے ودھماکے،اعلی حکام سمیت 29 ہلاک وزخمی

دعوت، حملے ودھماکے،اعلی حکام سمیت 29 ہلاک وزخمی

الفتح آپریشن کے سلسلے میں امارت اسلامیہ کے مجاہدین نے اعلی کٹھ پتلی حکام اور سیکورٹی فورسز کو پکتیا، غزنی، خوست، کاپیسا، سمنگان، لغمان، بلخ اورکابل صوبوں میں نشانہ بنایا،جب کہ پکتیکا، بدخشان اور ننگرہار صوبوں میں  6 اہلکار مجاہدین سے آملے۔

آمدہ اطلاعات کے مطابق اتوار کےروز شام اور رات گئے صوبہ پکتیا کے صدر مقام گردیز شہر کے ابراہیم خیل کے علاقے میں مجاہدین نے دو مرتبہ چوکی اور گشتی پارٹی پر حملہ کیا،جس کے نتیجے میں 3 اہلکار ہلاک ہوئے اور ضلع زرمت کے سورکی کے علاقے میں بم دھماکہ سے بم ڈسپوزل اہلکار ہلاک ہوا۔

دوسری جانب اتوار کےروز سہ پہر کے وقت صوبہ غزنی کے صدرمقام غزنی شہر میں بم دھماکہ سے پولیس رینجر گاڑی تباہ اور اس میں سوار ایک اہلکار ہلاک جب کہ 2 زخمی ہوئے اور رات گئے ضلع شلگر کے یرگٹو کے علاقے میں مجاہدین نے 3 چوکیوں پر حملہ کیا،جس میں 2 اہلکار ہلاک جب کہ متعدد زخمی ہوئے۔

اسی طرح اتوار اور پیرکی درمیانی شب صوبہ سمنگان کے صدر مقام ایبک شہر کے آق مزار کے علاقے میں نشے میں لت جنگجو نے جنگجو کمانڈرنجیب کو قتل کردیا۔

نیز اتوار کےروز شام کے وقت صوبہ کاپیسا ضلع نجرآب کے افغانیہ درہ کے امام خیل کے مقام پر مجاہدین نے کمانڈو کو موت کے گھاٹ اتار دیا۔

رپورٹ کے مطابق امارت اسلامیہ کے دعوت و ارشاد کمیشن کے کارکنوں کی دعوت کو لبیک کہتے ہوئے صوبہ پکتیکا کے خیرکوٹ،یحی خیل اور جانی خیل اضلاع میں 4 پولیس اہلکار غلام جان ولد نوراللہ جان، شاہ گل اور کلاخان ولدان جمعہ محمد اورغلام ولی ولد حضرات موسی ،جب کہ صوبہ بدخشان ضلع تشکان کے دہ میر کے رہائشی افغان عمرعلی ولد شاہ ولی اور صوبہ ننگرہار ضلع اچین کے باشندے افغان فوجی اسماعیل ولد محمد جمیل نے مخالفت سے دستبرداری کا اعلان کیا۔

صوبہ لغمان سے اطلاع ملی ہےکہ پیرکےروز صبح کے وقت ضلع قرغی کے چارباغ کے علاقے سرخ سنگیان کے مقام پر حکمت عملی کے تحت ہونے والے دھماکہ سے ایک جنگجو زخمی ہوا، جب کہ  اتوار کےروز مغرب کے وقت ضلع علیشنگ کے بہادر کے علاقے مں مجاہدین نے فوجی کمانڈر کو قتل کردیا اور ساتھ ہی تازہ دم اہلکاروں کو بھی نشانہ بنایاگیا،جس میں مزید 5 اہلکاروں کو ہلاکتوں کا سامنا ہوا۔

دریں اثناء صوبہ بلخ ضلع چمتال کے اسیاخان کے علاقے میں مجاہدین کے حملے میں ایک فوجی زخمی اور پیر کے روز صبح کے وقت ضلعی مرکز پر حملے میں ایک فوجی زخمی ہوا۔

ذرائع کے مطابق پیر کےروز صبح کے وقت کابل شہر کے یکہ توت کے علاقے میں مجاہدین نے اینٹلی جنس سروس آفسروں کی گاڑی پر حملہ کیا،جس کے نتیجے میں 5 اہلکار ہلاک و زخمی ہوئے۔

صوبہ خوست سے اطلاع ملی ہےکہ پیر کےروز دوپہر سے قبل خوست شہر کے مٹہ چینہ کے مقام پر حکمت عملی کے تحت ہونے والے دھماکہ سے پولیس رینجر گاڑی تباہ اور اس میں سوار کمانڈر سمیت 3 اہلکار ہلاک جب کہ 2 زخمی ہوئے۔

Related posts