دسمبر 14, 2019

غزنی فتوحات،آفسر سمیت37ہلاک،3 ٹینک وکا فی غنائم

غزنی فتوحات،آفسر سمیت37ہلاک،3 ٹینک وکا فی غنائم

الفتح آپریشن کے سلسلے میں امارت اسلامیہ کے مجاہدین نے صوبہ غزنی میں دشمن کے مراکز پر حملہ کیا۔

تفصیل کے مطابق پیر کےروز شام کے وقت  صدر مقام غزنی شہر کے حکیم سنائی کے علاقے میں مجاہدین نے پراسیکیورٹر محمدحسن حلیمی کو محافظ سمیت قتل کردیا اور نوآباد کے علاقے میں مجاہدین کے اسی نوعیت حملے میں 2 فوجی مارے گئے۔

دوسری جانب پیر اور منگل کی درمیانی شب ضلع شلگر کے عاشق وال کے علاقے کابل-قندہار ہائی وے پر واقع فوجی چوکی پر مجہدین نے حملہ کرکے اللہ تعالی کی نصرت سے اس پر قابض ہوئے اور وہاں تعینات 15 ہلاک ہوئے اور مجاہدین نے 3 فوجی ٹینک، 2 توپیں، ایک ہیوی مشین گن، 3 امریکی گن اور دیگر فوجی سازوسامان بھی غنیمت کرلی اورمنگل کےروز صبح کے وقت تازہ دم اہلکاروں پر ہونے والے حملے میں 5 اہلکار ہلاک ہونے کے علاوہ ایک بکتربند ٹینک بھی تباہ ہوا، جب کہ پیر کےروز شام کے وقت چاردیوار کے علاقے میں قائم فوجی مرکز پر مجاہدین نے میزائل داغے، جو اہداف پر گر کر دشمن کے لیے جانی و مالی نقصانات کے سبب بنے۔

اسی طرح عشاء کے وقت ضلع دہ یک کے تاسن کے علاقے میں پولیس چوکی پر مجاہدین نے قبضہ کرلیا اور وہاں تعینات 5 اہلکار قتل ہوئے اور مجاہدین نے ایک توپ، ایک ہیوی مشین گن، ایک سنائیپرگن اور دیگر فوجی ساوزسامان بھی غنیمت کرلی۔

دوسری جانب غزنی شہر کے قلعہ جوز کے مقام پر تازہ اہلکاروں کو مجاہدین کی کمین گاہ کا سامنا ہوا،جس کے نتیجے میں ایک ٹینک تباہ ہونے کے علاوہ 4 اہلکار بھی ہلاک ہوئے۔

نیز پیر کےروز سہ پہر کے وقت ضلع قرہ باغ کے مشکی کے علاقے میں بم دھماکوں سے 2 فوجی ٹینک تباہ ہونے کے علاوہ 3اہلکار ہلاک جب کہ 2 زخمی ہو‏ئے۔اسی طرح پیر اور منگل کی درمیانی شب کروسائی کے علاقے میں واقع چوکی پر ہونے والے حملے میں ایک جنگجو  مارا گیا۔

Related posts