دسمبر 14, 2019

بگرام امریکی بیس پر حملہ، پولیس چیف سمیت 11 ہلاک

بگرام امریکی بیس پر حملہ، پولیس چیف سمیت 11 ہلاک

امریکی ایئربیس اور سیکورٹی فورسز کو امارت اسلامیہ کے مجاہدین نے پروان، بغلان، بدخشان، بلخ، ننگرہار، خوست، غزنی اور کابل صوبوں میں نشانہ بنایا، جب کہ نورستان اور پکتیکا میں 2 اہلکار سرنڈر ہوئے۔

اطلاعات کے مطابق جمعہ کےروز صبح کے وقت صوبہ بغلان ضلع جلگہ کے پلفی کوتل کے علاقے میں صوبہ تخار ضلع اشمکش کے پولیس چیف کمانڈر بابا افضل کو مجاہدین نے 3 محافظوں سمیت موت کے گھاٹ اتار دیا اور ان کی گاڑی جب کہ ایک ہیوی مشین ،3 عدد کلاشنکوفیں اور دیگر فوجی سازوسامان مجاہدین نے قبضے میں لیا۔

دوسری جانب جمعہ کےروز دوپہر کے وقت صوبہ بدخشان ضلع یفتل پاین  کے شیرچنک کے مقام پر بم دھماکہ سے جنگجو کمانڈر حفیظ اللہ محافظ سمیت شدید زخمی ہوا۔

اسی طرح جمعرات اور جمعہ کی درمیانی شب عشاء کے وقت کابل شہر کے سرک نو کے علاقے میں مجاہدین نے پولیس رینجر گاڑی پر دستی بم سے حملہ کیا،جس سے گاڑی تباہ ہونے کے علاوہ ایک اہلکار بھی ہلاک ہوئے۔

دریں اثناء صوبہ غزنی کے صدر مقام غزنی شہر کے روضہ کے علاقے میں محمدبیگ نامی چوکی پر ہونےوالے حملے میں 2 اہلکار ہلاک ہوئے۔

رپورٹ کے مطابق جمعرات کےروز شام کے وقت صوبہ ننگرہار ضلع سرخ رود کے فتح آباد کے علاقےمیں بم دھماکہ نے 3 فوجیوں کی جان لی۔

اسی طرح شام ہی کے وقت صوبہ بلخ ضلع خاص بلخ کے عالم خیل کے علاقے میں چوکی پر ہونے والے حملے میں جنگجو کمانڈر طاؤس شدید زخمی ہوا اور شام کے وقت صوبہ خوست ضلع موسی خیل کے سرہ نامی چوکی پر سنائیپرگن حملے میں ایک فوجی قتل ہوا۔

صوبہ پروان سے اطلاع ملی ہے کہ جمعہ کےروز صبح کے وقت ملکی سطح پر واقع جارح امریکی فوجوں کے سب سے بڑے اڈے بگرام ایئربیس پر مجاہدین نے میزائل داغے، جو اہداف پر گر کر دشمن کے لیے جانی و مالی نقصانات کے سبب بنے ، لیکن اطلاع آنے تک تفصیل فراہم نہ ہوسکی۔

دوسری جانب صوب نورستان ضلع وانٹ وایگل کے ارنس گاؤں کے رہائشی افغان فوجی اور صوبہ پکتیکا ضلع جانی خیل کے ملنگ خیل گاؤں کے باشندے سیکورٹی اہلکار نے حقائق کا ادراک کرتے ہوئے مخالفت سے دستبردار ہوئے۔

Related posts