دسمبر 14, 2019

دشمن فرار،فتوحات، کمانڈروں سمیت  15ہلاک

دشمن فرار،فتوحات، کمانڈروں سمیت  15ہلاک

امارت اسلامیہ کے مجاہدین نے غزنی، بلخ، کاپیسا، میدان اور لغمان صوبوں میں سیکورٹی فورسز کو نشانہ بنایا۔

تفصیل کے مطابق جمعرات کے روز صبح کے وقت صوبہ غزنی کے صدر مقام غزنی شہر کے شیخ اجل کے علاقے میں مجاہدین نے ظالم جنگجو کمانڈر محب اللہ اتل کو 4 محافظوں سمیت حکمت عملی کے تحت ہونے والے دھماکے سے موت کے گھاٹ اتار دیا اوربدھ کےروز شام کے وقت نوآباد کے علاقے میں مجاہدین نے اینٹلی جنس سروس اہلکار کو قتل کردیا، جب کہ بدھ کے روز دوپہرکے وقت ضلع دہ یک کے مرکز کے قریب مجاہدین نے ایک فوجی کو مار ڈالا۔

دوسری جانب ضلع قرہ باغ کے لیونی بازار، نوروزخیل، لونی پمپ، فاتح، عبداللہ گل، باران قلعہ اور مشکی کے علاقوں میں قائم 7 چوکیوں اور ایک مرکز کو کٹھ پتلی فوجوں نے بدھ اور جمعرات کی درمیانی شب چھوڑ کر فرار ہوئے۔

صوبہ بلخ سے اطلاع ملی ہےکہ بدھ اور جمعرات کی درمیانی شب عشاء کے وقت ضلع چمتال کے کجہ کے مقام پر پولیس چوکی پر ہونے والے حملے میں کمانڈر محمدایازہلاک اور ایک اہلکار زخمی ہوا اور بدھ کے روز شام کے وقت ضلع چاربولک کے خان اباد کے علاقے میں فوجی بیس پر سنائیپرگن حملے میں ایک فوجی ہلا ک ہوا۔

رپورٹ کے مطابق بدھ کے روز شام کے وقت صوبہ کاپیسا ضلع تگاب کے شیرخیل اور جویبار کے علاقوں میں مجاہدین کے حملوں میں 2 فوجی ہلاک جب کہ 3 زخمی ہوئے اور رات کے وقت صدرمقام محمودراقی شہر کے دہ باباجی کے مقام پر مجاہدین نے ایک فوجی کو قتل کردیا۔

دریں اثناء بدھ کےروز صوبہ میدان ضلع چک کے خوسا چینہ اور ضلع سیدآباد کے سالار کے علاقوں میں بم دھماکوں سے 2 اہلکار ہلاک ہوئے۔

نیز بدھ کےروز صوبہ لغمان ضلع علیشنگ کے  شمس خیل کے علاقے میں اسی نوعیت دھماکہ سے ایک فوجی ہلاک جب کہ دوسرا زخمی ہوا۔

Related posts