دسمبر 14, 2019

قندہار، ہلمند وسرپل: دشمن کے حملے پسپا، ٹینک تباہ، 14 ہلاکتیں

قندہار، ہلمند وسرپل: دشمن کے حملے پسپا، ٹینک تباہ، 14 ہلاکتیں

الفتح اپریشن کے سلسلے میں قندہار، ہلمند وسرپل صوبوں میں کٹھ پتلی فوجیوں پر مجاہدین نے حملہ کیا۔

اطلاعات کے مطابق بدھ کے روز صبح چھ بجے کے لگ بھگ صوبہ ہلمند ضلع ناوہ کے ژڑ صاحب کے علاقے میں ہونے والے بم دھماکہ سے 2 اہلکار ہلاک وزخمی ہوئے اور منگل کے روز دو پہر گیارہ بجے کے لگ بھگ ضلع سنگین کے خاکش کاریز کے علاقے میں دشمن پر حملہ ہوا، جس سے ٹینک تباہ اور اس میں سوار اہلکار ہلاک وزخمی ہوئے، دوسری جانب منگل کے روز دو پہر گیارہ بجے کے لگ بھگ کووک کے علاقے میں پولیس سے جھڑپیں ہوئیں، جس سے 4 اہلکار ہلاک ہوئے، جبکہ منگل کے روز عصر پانچ بجے کے لگ بھگ ضلع گرشک کے دہ آدم خان کے علاقے میں دشمن پر گھات کی صورت میں حملہ ہوا، جس سے 2 سنگور جنگجو ہلاک ہوئے۔

رپوٹ کے مطابق منگل کے روز صبح کے وقت صوبہ سرپل ضلع صیاد امریکیوں اور ان کے کٹھ پتلیوں نے طیاروں ہمراہ آپریشن کا اغاز کیا، جنہیں شدید مزاحمت کا سامنا ہوا اور لڑائی چھڑ گئی، جس سے دشمن نے نقصانات اٹھاتے ہی فرار کی راہ اپنالی۔

یاد رہے کہ نا کام دشمن نے علاقے پر بمبار کی، جس سے 15 مکانات منھدم ہوئے۔

قابل یاد آوری ہے کہ دشمن کے فائرنگ سے 2 مجاہدین شہید ہوئے۔ تقبلہم اللہ تعالی

اطلاع کے مطابق منگل کے روز شام چھ بجے کے لگ بھگ صوبہ قندہار ضلع شاولیکوٹ کے تناوچئی کے علاقے میں لیزر گن سے 4 اہلکار ہلاک ہوئے، اور منگل کے روز صبح کے وقت نو بجے کے لگ بھگ ضلع ارغستان کے تورئی گارئی کے علاقے میں ہونے والے بم دھماکہ سے 2 اہلکار ہلاک ہوئے۔

Related posts