نومبر 16, 2019

الفتح آپریشن: قافلے پر حملے ودھماکے، 12 ٹینک وگاڑیاں تباہ، ہلاکتیں

الفتح آپریشن: قافلے پر حملے ودھماکے، 12 ٹینک وگاڑیاں تباہ، ہلاکتیں

الفتح آپریشن کے سلسلے میں زابل، فراہ، بادغیس وہلمند صوبوں میں ضلعی مرکز اور فوجی کانوائی پر حملہ ودھماکہ ہوا۔

رپوٹ کے مطابق جمعہ کے روز صوبہ زابل کے صدر مقام قلات شہر سے ضلع شاہ جوئی کی طرف فوجی قافلے پر (جو 120 ٹینک وبنکتر بندگاڑیوں پر مشتمل ہے) حملے ودھماکے ہوئے، جس سے 3 ٹینک اور 3 گاڑیاں تباہ اور ان میں سوار اہلکاروں کو ہلاکتوں کا سامنا ہوا، تا ہم تفصیل موصول نہ ہوسکا۔ یاد رہے کہ دشمن کے فائرنگ سے 2 مجاہدین شہید ہوئے۔ تقبلہم اللہ تعالی

رپوٹ کے مطابق جمعہ کے روز دن دس بجے کے لگ بھگ صوبہ فراہ ضلع پشتکوہ کے مرکز پر مجاہدین نے میزائل داغے، جو اہداف پر گرکر دشمن کے لیے نقصانات کا سبب بنے، اسی طرح جمعہ کے روز عصر پانچ بجے کے لگ بھگ ضلع بالابلوک کے شیوان کے علاقے میں سنائپر گن سے ایک فوجی ہلاک ہوا، جبکہ سنیچر کے روز صبح نو بجے کے لگ بھگ ضلع پشترود کے تپہ اور مادگان کے علاقوں میں ہونے والے بم دھماکوں سے 2 ٹینک تباہ اور 2 اہلکار ہلاک ہوئے۔ اور جمعہ کے روز عصر پانچ بجے کے لگ بھگ صوبائی دار الحکومت فراہ شہر کے مالدارانوں کے علاقے میں بھی ٹینک بم دھماکہ سے تباہ اور اس میں سوار اہلکار ہلاک ہوئے۔

جہادی ذرائع نے صوبہ بادغیس ضلع قادس سے اطلاع دی کہ سنیچر کے روز صبح آٹھ بجے کے لگ بھگ قرچق کے علاقے میں فوجی قافلے پر مجاہدین نے حملہ کیا، جو دو گھنٹے تک جاری رہا، جس سے ٹینک وگاڑی تباہ اور 4 اہلکار ہلاک وزخمی ہوئے۔

اطلاع کے مطابق سنیچر کے روز دو پہر بارہ بجے کے لگ بھگ صوبہ ہلمند ضلع نوہ کے جرناموں کے علاقے میں فوجی ٹینک مجاہدین کی نصب شدہ بارودی سرنگ سے ٹکراکر تباہ اور اس میں سوار اہلکاروں کو ہلاکتوں کا سامنا ہوا۔

Related posts