اکتوبر 20, 2019

دعوت اور حملے،کمانڈراور18 قتل، 12 مسلح اہلکار سرنڈر

دعوت اور حملے،کمانڈراور18 قتل، 12 مسلح اہلکار سرنڈر

الفتح آپریشن کے سلسلے میں امارت اسلامیہ کے مجاہدین نے لوگر، قندوز،میدان، خوست اور بغلان صوبوں میں دشمن کو نشانہ بنایا، جب کہ صوبہ جوزجان میں کمانڈر نے جنگجوؤں کےہمراہ مجاہدین کے سامنے ہتھیار ڈال دیے۔

اطلاعات کے مطابق بدھ کےروزدوپہر کے وقت صوبہ لوگر ضلع محمدآغہ کے سرخاب کے علاقے میں بم دھماکہ نے 4 جنگجوؤں کی جان لی اور رات کے وقت وغجان بازار کے قریب فوجی چوکی پر ہونے والے حملے میں 2 اہلکار ہلاک ہوئے،جب کہ رات ہی وقت ضلع چرخ کے خواجہ علی کے علاقے میں چوکی پرمجاہدین کے حملے میں 5 فوجی ہلاک ہوئے۔

دوسری جانب بدھ کےروز دوپہر سے قبل صوبہ قندوز کے صدر مقام قندوز شہر کے شینوار کے علاقے میں مجاہدین کے حملے میں جنگجو کمانڈر حکمت ہلاک،ان کی گاڑی اور اسلحہ مجاہدین نے قبضے میں لیا۔

رپورٹ کے مطابق بدھ کےروز دوپہر سے قبل صوبہ میدان کے صدر مقام میدان شہر کے خواجہ بازار کے مقام پر بم دھماکہ سے 3 فوجی ہلاک جب کہ 2 زخمی ہوئے۔

دریں اثناء صوبہ خوست ضلع علی شیر کے خانے کے مقام پر مجاہدین نے اینٹلی جنس سروس اہلکار زیارت کو موت کے گھاٹ اتار دیا۔

اسی طرح منگل اور بدھ کی درمیانی شب صوبہ بغلان ضلع پل خمری کے مرکز کے قریب خواجہ الوان کے مقام پر چوکی پر ہونے والے حملے میں 2 اہلکار ہلاک جب کہ 3 زخمی ہوئے۔

صوبہ جوزجان سے اطلاع ملی ہے کہ ضلع درزآب کے مربوطہ علاقے میں آنتن نامی چوکی  میں تعینات جنگجو کمانڈر شیرمحمد ارباب نے 12 مسلح جنگجوؤں کے ہمراہ مجاہدین کے سامنے ہتھیار ڈال دیے اوراپنا اسلحہ و دیگر فوجی سازوسامان بھی ان کے حوالے کردیا۔

واضح رہےکہ مذکورہ چوکی گذشتہ دس دنوں شدید محاصرے میں تھا اور رات کے وقت دشمن نے ہتھیار ڈال دیے۔

Related posts