اکتوبر 20, 2019

فورسز پر شدید حملے، کمانڈر سمیت 34 ہلاک

فورسز پر شدید حملے، کمانڈر سمیت 34 ہلاک

الفتح آپریشن کے سلسلے میں امارت اسلامیہ کے مجاہدین نے قندہار، ہلمند، زابل، ننگرہار،کابل، پکتیکا، روزگان،بلخ اور غزنی صوبوں میں نشانہ بنایا۔

اطلاعات کے مطابق پیر کےروز شام کے وقت صوبہ ہلمند ضلع نادعلی کے کوچیان کے علاقے میں مجاہدین کے حملے میں پولیس کمانڈر امیرمحمد ہلاک اور ان کی گاڑی تباہ ہوئی،جب کہ منگل کےروز دوپہر کےوقت ضلع ناوہ کے خسرآباد کے علاقے میں مجاہدین کے حملے میں پولیس اہلکارہلاک اور دوسرا زخمی ہوااور ضلع گریشک کے نہرسراج کے علاقے میں مجاہدین نے ایک فوجی کو قتل کردیا۔

دوسری جانب اتوار اور پیر کی درمیانی شب جارح امریکی و کٹھ پتلی کمانڈو نے صوبہ روزگان کے صدر مقام ترینکوٹ شہر کے شاہ ظفر کے مقام پر چھاپہ مارا،جن پر مجاہدین نے حملہ کیا،جس کے نتیجے میں 3 چھاپہ مار کمانڈو ہلاک ہوئے اور منگل کےروز صبح کے وقت ضلع دہراود کے لوندیان کے مقام پر مجاہدین نے 2 فوجیوں کو مار ڈالے۔

رپورٹ کے مطابق پیر کےروز مغرب کے وقت صوبہ قندہار کے صدر مقام قندہار شہر کے قریب مجاہدین نے ایک فوجی کو قتل کردیااور ضلع میوند کے کلان کیچہ کے مقام پر بم دھماکہ سے فوجی رینجر گاڑی تباہ اور اس میں سوار اہلکار ہلاک و زخمی ہوئے۔

صوبہ زابل سے اطلاع ملی ہے کہ پیر کےروز شام کے وقت صدر مقام قلات شہر کے سپینہ غبرگہ کے مقام پر مجاہدن نے 2 فوجیوں کو مار ڈالے، جب کہ ضلع سیورئے کے گڑابند کے مقام فوجی مرکز پر سنائیپرگن حملے میں ایک فوجی مارا گیا۔

رپورٹ کے مطابق صوبہ بلخ کے خاص بلخ،چمتال اورنہرشاہی اضلاع کے عالم خیل،مرکز اور شہرک ترکمنی کے علاقوں میں فوجی کاروان،مراکز اور کاروان پر ہونے والے حملوں میں 4 جنگجو ہلاک جب کہ کمانڈر سمیت 4 زخمی ہوئے۔

رپورٹ کے مطابق منگل کےروز صوبہ غزنی کے صدر مقام غزنی شہر کے لشمک کے مقام پر مجاہدین کے حملے میں 2 فوجی ہلاک اور ان کی گاڑی تباہ ہوئی ۔اسی طرح ضلع دہ یک کے مرکز کے قریب پولیس گشتی پارٹی پر ہونے والے حملے میں 3 اہلکار ہلاک ہوئے اور صبح کے وقت ضلع جغتو کے قیاق کے علاقے میں بم دھماکہ سے بکتربند فوجی ٹینک تباہ اور اس میں سوار 5 اہلکار لقمہ اجل بن گئے۔

نیز صوبہ ننگرہار ضلع مہمنددرہ کےمربوطہ علاقے میں بم دھماکے سے ایک فوجی ہلاک ہوا، جب کہ رات کے وقت صوبہ پکتیکا کے صدر مقام شرنہ شہر کے سرہ قلعہ  کے مقام پر چوکی پر حملے کے دوران ایک پولیس ہلاک جب کہ دوسرا زخمی ہوا۔

صوبہ کابل سے اطلاع ملی ہےکہ رات کے وقت ضلع قرہ باغ کے پروان روڈ پر مجاہدین نے اینٹلی جنس سروس اہلکار کو قتل کردیا اور ان کے پستول کو قبضے میں لیا اور ساتھ ہی پولیس ٹینک  دھماکہ خیز مواد سے تباہ اور اس میں سوار 5 اہلکاروں کو ہلاکتوں کا سامنا ہوا۔

Related posts