دسمبر 11, 2019

ہلمند میں القاعدہ کو منسوب رہنما کے قتل کا دعوہ بےبنیاد

ہلمند میں القاعدہ کو منسوب رہنما کے قتل کا دعوہ بےبنیاد

کابل انتظامیہ کے حکام نے دعوہ کیا کہ کچھ عرصہ قبل صوبہ ہلمند ضلع موسی قلعہ میں شادی تقریب پر بمباری اور چھاپے کے دوران القاعدہ تنظیم کو منسوب ایک رہنما کو قتل کیا جاچکا ہے۔ہم کابل انتظامیہ کے اس دعوے کی پرزور الفاظ میں تردید کرتے ہیں  اور اسے دشمن کے پروپیگنڈے کا ایک حصہ سمجھتے ہیں۔

حقیقت یہ ہے کہ صوبہ ہلمند ضلع موسی قلعہ میں کاروائی کے دوران صرف عوام کو بھاری جانی نقصان پہنچا اور شادی کی تقریب میں شرکاء سمیت درجنوں عام افغان شہری شہید اور زخمی ہوئے تھے۔

دشمن اس طرح دعوؤں سے کوشش کررہا ہے کہ موسی قلعہ میں سرانجام دینے والے جرم کا پردہ پوشی کریں۔

قاری محمدیوسف احمدی ترجمان امارت اسلامیہ

09 صفرالمظفر 1441ھ بمطابق 08 اکتوبر 2014 ء

Related posts