اکتوبر 20, 2019

امریکی مراکزاورکمانڈو پر حملے،36ہلاک و زخمی

امریکی مراکزاورکمانڈو پر حملے،36ہلاک و زخمی

امریکی ایئربیس اور کٹھ پتلی فوجوں کوامارت اسلامیہ کے مجاہدین نے الفتح آپریشن کے سلسلے میں لوگر، پروان، ننگرہار، پکتیا،غزنی، میدان ،بلخ اور پکتیکاصوبوں میں نشانہ بنایا۔

تفصیل کے مطابق سنیچر کےروز شام کے وقت صوبہ لوگر ضلع محمدآغہ کے زاہدآباد کے علاقے میں مجاہدین نے کمانڈو کے قافلے پر حملہ کیا،جس میں ایک ٹینک اور ایک رینجر گاڑی تباہ ہونے کے علاوہ 3 اہلکار ہلاک جب کہ 7 زخمی ہوئے اور اتوارکےروز صبح کے وقت آب بازک کے علاقے میں جنگجوؤں پر ہونے والے حملے میں 3 ہلاک جب کہ 2 زخمی ہوئے۔اسی طرح دوپہر کے وقت صدر مقام پل عالم شہر کے مربوطہ علاقے میں واقع امریکی فوجوں کے مرکز خضر نامی فوجی بیس پر مجاہدین نے دو مرتبہ میزائلوں کا نشانہ بنایا،جس کے نتیجے میں دشمن کو جانی و مالی نقصانات کا سامنا ہوا۔

دوسری جانب سنیچر کےروز شام کے وقت صوبہ پروان ضلع بگرام کے مربوطہ علاقے میں واقع جارح امریکی فوجوں کے ملکی سطح پر سب سے بڑے اڈے بگرام ایئربیس پر مجاہدین نے اسی نوعیت کا حملہ کیا، جو اہداف پر گر کر غاصب دشمن کے لیے جانی و مالی نقصانات کے سبب بنے۔

دوسری جانب سنیچر کے روز دوپہر ے وقت صوبہ غزنی ضلع قرہ باغ کے شوبار کے مقام پر مجاہدین کے حملے میں ایک ٹینک تباہ ہونے کے علاوہ 2 اہلکار بھی ہلاک ہوئے۔

نیز سنیچر اور اتوار کی درمیانی شب عشاء کے وقت صوبہ میدان ضلع سیدآباد کے عبدالمحی الدین نامی فوجی مرکز پر لیزرگن حملے میں ایک فوجی مارا گیا اور سنیچر کےروز صوبہ ننگرہار ضلع سرخ رود کے سرخیلی چوک کے مقام پر مجاہدین نے ایک فوجی کو سنائیپرگن سے مار ڈالا۔

نیز رات کے وقت صوبہ پکتیا ضلع سمکنی کے منداخیل کے مقام پر مجاہدین نےجنگجوؤں پر حملہ کیا، جس میں ایک اہلکار ہلاک جب کہ 3 زخمی ہوئے اور سنیچر کےروز سہ پہر کے وقت صوبہ پکتیکا ضلع یوسف خیل کے بازار کے قریب حکمت عملی کے تحت ہونیوالے دھماکہ سے 3 پولیس اہلکار زخمی ہوئے۔

رپورٹ کے مطابق سنیچر اور اتوار کی درمیانی شب صوبہ بلخ ضلع شولگرہ کے سیاآب کے علاقے میں فوجی بیس پر ہونے والے حملے میں 4 کمانڈو ہلاک جب کہ 3 زخمی ہوئیں اور اتوار کےروز صبح کے وقت مجاہدین نے ایک مرتبہ پھر اسی بیس کو نشانہ بنایا،جس میں 2  فوجی ہلاک جب کہ ایک زخمی ہوا۔

Related posts