دسمبر 06, 2019

مجاہدین مظلوم قوم کے محافظ ہیں

مجاہدین مظلوم قوم کے محافظ ہیں

آج کی بات

امارت اسلامیہ نے یوم تاسیس سے آج تک اپنے مظلوم عوام کے حقوق کے دفاع کو ترجیح دی ہے ۔ کرپٹ عناصر، جابروں اور حملہ آوروں کے خلاف بھرپور جدوجہد کی ہے ۔ امارت اسلامیہ کے غیور مجاہدین نے اپنے لہو سے اسلامی اقدار اور قومی مفادات کا تحفظ کیا ہے۔ عوام کی جان، مال اور عزت کے دفاع اور حفاظت کو اپنا فریضہ سمجھا ہے۔

کچھ عرصے سے حملہ آوروں اور کابل انتظامیہ کے سفاک قاتلوں نے نہتے عوام کی انفرادی اور اجتماعی شہادت ، گھروں کی تباہی اور لوٹ مار کا سلسلہ تیز کر دیا ہے۔ ہر روز دشمن کے حملوں اور چھاپوں میں مختلف علاقوں میں نہتے شہری شہید ہوتے ہیں۔ ان کے گھروں اور دکانوں کو تباہ کیا جاتا ہے۔ مساجد ، اسکولز، مدارس اور ہسپتالوں کو نشانہ بنایا جاتا ہے۔ مجاہدین نے مظلوم لوگوں کا دفاع کیا ہے۔ سفاک دشمن سے افغان عوام کا انتقام لیا ہے۔

امارت اسلامیہ کی انتقامی کارروائیوں میں دشمن کے بڑے مراکز تباہ کر دیے گئے ہیں۔ سیکڑوں حملہ آور فوجی، اجرتی فورسز کے اہل کار اور سینئر کمانڈر مارے گئے ہیں۔ مالی لحاظ سے بھی دشمن کو غیرمعمولی نقصان پہنچایا گیا ہے۔ پچھلے ماہ کے دوران کابل، غزنی، قندھار، فاریاب، بادغیس، تخار، بدخشان، فراہ، زابل، لوگر، میدان وردگ اور دیگر صوبوں میں فدائی اور جارحانہ حملوں کے نتیجے میں دشمن کے حواس معطل ہو گئے ہیں۔

گزشتہ روز بھی کابل میں انتقامی حملوں کے دوران دشمن کے سب سے اہم مراکز کو نشانہ بنایا گیا۔ کابل شہر کے یوسی چھ کے مرکز اور اس کے قریب بھرتی کے مرکز پر فدائی حملہ کیا گیا۔ اس کامیاب کارروائی میں دشمن کے درجنوں فوجی ہلاک اور متعدد زخمی ہوئے۔ جب کہ فوجی مراکز مکمل طور پر تباہ ہوئے۔ اس حملے کے لیے بہترین منصوبہ بنایا گیا تھا، جس کی وجہ سے شہریوں کو جانی نقصان نہیں ہوا ۔

امارت اسلامیہ کے مجاہدین اپنے عوام کے مال و جان کا دفاع کرنا اپنا فرض سمجھتے ہیں ۔ اس راہ میں بہت قربانیاں دی گئی ہیں۔ مجاہدین حملہ آوروں اور کٹھ پتلیوں کے ظلم و سربریت کو روکنے کے لیے پرعزم ہیں۔ افغان عوام کے حقوق کے تحفظ کے لیے ہر ممکن وسائل بروئے کار لائے جائیں گے۔

ان شاء اللہ

Related posts