دسمبر 11, 2019

میدان، بغلان اور ہرات شہری قتل عام پر ترجمان کا بیان

میدان، بغلان اور ہرات شہری قتل عام پر ترجمان کا بیان

جنگی جرائم اور عام شہریوں کو جان بوجھ کر قتل کے سلسلے میں پیر اور منگل کی درمیانی شب امریکی اور کابل انتظامیہ کی فوجوں نے صوبہ میدان ضلع چک کے تنگی سیدان ہسپتال اور گوڈہ گاؤں پر چھاپہ مارکر ہسپتال کو مہندم ، ڈائریکٹر، ڈاکٹر یاسین، نرس اور ایک مریض چاروں کو شہید  اور ڈاکٹر وحیداللہ کوحراست میں لیا۔

اس حال میں یہ وحشت ہورہا ہے کہ اسی رات استعماری اور کٹھ پتلی افواج نے صوبہ بغلان ضلع پل خمری کے مرکز کے حلقہ نمبر2 کے مربوطہ کتب خیل گاؤں  میں اسماعیل کے مکان پر شدید بمباری کی،جس سے مکانتباہ اور وہاں موجود ایک عورت اور پانچ بچے شہید جب کہ اسماعیل شدید زخمی ہوا۔

اس حال میں چار روز قبل مذکورہ ضلع کے ڈنڈشہاب الدین کے علاقے حاجی نادر گاؤں پر اسی نوعیت بمباری میں ایک خاتون شہید اور 5 بچے زخمی ہوئے تھے۔

اسی طرح گذشتہ پانچ روز کے دوران صوبہ ہرات ضلع شینڈنڈ کےبخت آباد ، علی آباد اور کاریزدینک کے علاقوں پر 6 مرتبہ شدید بمباری کے دوران ایک مسجد منہدم ہونے کے علاوہ 4 شہری شہید جب کہ 3 زخمی ہوئے تھے۔

امارت اسلامیہ ان تمام قصدی قتل عام اور جنگی جرائم کی شدید الفاظ میں مذمت کرتی ہے۔ عالمی انسانی اور حقوقی اداروں سے مطالبہ کرتی ہے کہ امریکی استعمار کے جنگی جرائم اور شہریوں کے قتل عام کا پوچھ گچھ کریں اور مزید جرائم کا روک تھام کریں۔

ذبیح اللہ مجاہد ترجمان امارت اسلامیہ

06/ ذیقعدہ 1440 ھ بمطابق 09 / جولائی 2019 ء

Related posts