مجاہدین کے حملے، کمانڈروں سمیت 34 ہلاک و زخمی

الفتح آپریشن کے سلسلے میں امارت اسلامیہ کے مجاہدین نے بغلان، پکتیکا، ننگرہار اور کاپیسا صوبوں میں دشمن کو نشانہ بنایا۔

تفصیلات کے مطابق اتوار کےروز سہ پہر کے وقت صوبہ بغلان ضلع مرکزی بغلان کے شہرجدید کے علاقے میں مجاہدین اور جنگجوؤں کے درمیان چھڑنے والی لڑائی میں جنگجو کمانڈر سرباز اور کمانڈر زرغون سمیت 5 زخمی جب کہ کمانڈر حکمت قتل ہوا اور مجاہدین نے ایک کلاشنکوف اور ایک ہینڈگرنیڈ بھی قبضے میں لیا اور ضلع دوشی کے دوستی کے مقام پر فوجی کاروان پر ہونیوالے حملے میں دو سپلائی گاڑیاں جل کر خاکستر ہوئیں۔

دوسری جانب سنیچر کےروز شام کے وقت صوبہ پکتیکا ضلع مٹھاخان کے مریانی کے علاقے میں مجاہدین نے جنگجوؤں کی دو چوکیوں پر حملہ کیا،جس میں ایک شرپسند ہلاک جب کہ 4 زخمی ہوئے اور ضلع خیرکوٹ کے مرکز کے قریب بم دھماکہ سے  3 پولیس اہلکار زخمی ہوئے۔

نیز صوبہ کاپیسا ضلع نجرآب کے مربوطہ علاقوں میں مجاہدین کے حملے میں 3 جنگجو ہلاک اور کمانڈر زمان شدید زخمی ہوا۔

صوبہ ننگرہار سے موصولہ رپورٹ کے مطابق صدر مقام جلال اباد شہر کے کامہ پل کے قریب مجاہدین نے اینٹلی جنس سروس آفسر عباس باچا کو محافظ سمیت موت کے گھاٹ اتار دیا اور رات کے وقت ضلع غنی خیل کے مربوطہ علاقے میں فوجی کاروان پر مجاہدین نے حملہ کیا،جس میں 6 اہلکار ہلاک ہوئے، جب کہ ضلع سرخ رود کے فتح آباد کے علاقے میں بم دھماکہ سے ایک فوجی ہلاک جب کہ 2 زخمی ہوئے اور ضلع لعل پور کے سدہ گاؤں کے قریب چوکیوں مجاہدین نے حملہ کیا،جس کے نتیجے میں اللہ تعالی کی نصرت سے ایک چوکی فتح اور وہاں تعینات جنگجوؤں میں سے 2 ہلاک جب کہ 3 زخمی ہوئے۔

ایک تبصرہ

  1. عرفان احمد

    ماشاءاللہ، اللہ آپ لوگوں کو نصرت سے نوازے اور آپ کو کامیاب کرے۔

جواب لکھیں

آپ کا ای میل شائع نہیں کیا جائے گا۔نشانذدہ خانہ ضروری ہے *

*