مارچ 07, 2021

بلخ، بغلان و ننگرہار فتوحات،27 ہلاک و زخمی،ٹینک تباہ

بلخ، بغلان و ننگرہار فتوحات،27 ہلاک و زخمی،ٹینک تباہ

الفتح آپریشن کے سلسلے میں امارت اسلامیہ کے مجاہدین نے بغلان، بلخ اور ننگرہار صوبوں میں کٹھ پتلی فوجوں کے مراکز پر حملہ کیا۔

اطلاعات کے مطابق جمعہ کےروز صوبہ بلخ ضلع شولگرہ کے  بودلہ قلعہ کے علاقے میں بم دھماکہ سے فوجی ٹینک تباہ،اس میں سوار اہلکار ہلاک و زخمی ہوئے،جب کہ کمانڈو پر ہونے والے حملے میں 10 اہلکاروں کو ہلاکتوں کا سامنا ہوا۔

رپورٹ کے مطابق صوبہ بغلان ضلع پل خمری کے عمرخیل گاؤں کے قریب مجاہدین نے دو فوجی مراکز پر رات کے وقت وسیع حملہ کیا،جس کے نتیجے میں اللہ تعالی کی نصرت سے دونوں مراکز فتح اور وہاں تعینات اہلکاروں میں سے ایک ہلاک،3 زخمی اور دیگر فرار ہوئے۔

دوسری جانب ضلع مرکزی بغلان کے شہرکہنہ کے علاقے میں کمانڈر کمال کی چوکی پر ہونے والے حملے میں 2 اہلکار ہلاک جب کہ 4 زخمی ہوئے۔

اسی طرح صوبہ ننگرہار ضلع شیرزاد کے گندمک کے علاقے قلالان قلعہ کے مقام پر بم دھماکہ سے ایک فوجی ہلاک ، 2 زخمی ہوئے جب کہ قاضی قلعہ کے مقام پر بم دھماکہ سے پولیس رینجر گاڑی تباہ اور اس میں سوار 3 اہلکار لقمہ اجل بن گئے۔

Related posts