مارچ 07, 2021

قندوزو بغلان فتوحات،کمانڈروں سمیت 44 ہلاک، 5 گرفتار

قندوزو بغلان فتوحات،کمانڈروں سمیت 44 ہلاک، 5 گرفتار

الفتح آپریشن کے سلسلے میں  امارت اسلامیہ کے مجاہدین نے قندوز اور بغلان صوبوں فوجی چوکیوں اور مراکز پر حملہ کیا۔

اطلاعات کے مطابق پیر اور منگل کی درمیانی شب صوبہ قندوز ضلع دشت آرچی کے مربوطہ علاقے میں دواقع دو چوکیوں پر مجاہدین نے وسیع حملہ کرکے اللہ تعالی کی نصرت سے اس پر قبضہ کرلیا اورو ہاں تعینات اہلکاروں میں سے جنگجو کمانڈر احمد شاہ سمیت 21 اہلکار ہلاک، جب کہ 6 زخمی اور 3 فوجی ٹینک بھی تباہ ہوئے۔

دریں اثنا ضلع گل تپہ کے باغ شرکت فوجی بیس کی دفاعی چوکی پر مجاہدین نے اسی نوعیت حملہ کرکے اس پر قابض ہوئے اور وہاں تعینات 18 اہلکاروں کو ہلاکتوں کا سامنا ہونے کے علاوہ ایک ٹینک بھی تباہ ہوا۔

ذرائع کے مطابق مجاہدین نے تمام چوکیوں میں موجود کافی مقدار میں ہلکے وبھاری ہتھیاروں کو بھی تحویل میں لیا۔

دوسری جانب صوبہ بغلان ضلع پل خمری کے بابا نظر کےعلاقے میں فوجی بیس پر مجاہدین نے حملہ کرکے اس پر قبضہ کرلیا اور وہاں تعینات اہلکاروں میں سے 4 ہلاک، 5 گرفتار اور دیگر فرار ہوئے اور ساتھ ہی مجاہدین نے کافی مقدار میں اسلحہ وغیرہ بھی قبضے میں لیا، جب کہ مغرب کے وقت پل خمری شہر کے قریب سمینٹ بلاک کے مقام پر حکمت عملی کے تحت ہونے والے دھماکہ سے فوجی کمانڈر غفار لکن خیل ہلاک اور ان کے دو محافظ زخمی ہوئے۔

Related posts