جنوری 16, 2021

آپریشن فتوحات، 20 ہلاک، 13 سرنڈر، ٹینک اسلحہ غنیمت

آپریشن فتوحات، 20 ہلاک، 13 سرنڈر، ٹینک اسلحہ غنیمت

الفتح آپریشن کے سلسلے میں امارت اسلامیہ کے مجاہدین نے قندوز اور بلخ صوبوں میں چوکیوں پر حملہ کیا، جب کہ ننگرہار اور بغلان صوبوں میں سیکورٹی اہلکار مخالفت سے دستبردار ہوئے۔

تفصیل کے مطابق جمعرات اور جمعہ کی درمیانی شب صوبہ قندوز ضلع امام صاحب کے چہل کپہ کے علاقے میں واقع چوکی پر مجاہدین نے حملہ کرکے اسے تباہ کردی، وہاں تعینات 13 اہلکار ہلاک ہوئے اور مجاہدین نے ایک ٹینک اور کافی مقدار میں ہلکے و بھاری ہتھیار قبصے میں لیا۔

واضح رہےکہ دشمن کی جوابی فائرنگ سے مجاہد بھی شہید ہوا۔ تقبلہ اللہ

دریں اثنا صوبہ بلخ ضلع کلدار کے کہنہ کلدار کے علاقے میں مجاہدین نے پولیس چوکی پر حکمت عملی کے تحت کرکے اس پر قبضہ کرلیا اور وہاں تعینات 7 اہلکار ہلاک ہوئے،جن کے اسلحہ اور دیگر فوجی سازوسامان مجاہدین نے تحویل میں لیا۔

رپورٹ کے مطابق کمیشن برائے دعوت و ارشاد کے عہدیداروں کی جدوجہد کے نتیجے میں صوبہ ننگرہار کے خوگیانی، اچین، حصارک، سرخ رود اوربٹی کوٹ اضلاع میں 8 سیکورٹی اہلکار نورزمان، ہجرت اللہ، شائستہ، عبدالاحد، عبداللہ، محمد الدین، عثمان اور ارشاد احمد جب کہ صوبہ بغلان کے پل خمری اور مرکزی بغلان اضلاع میں5 سیکورٹی اہلکار  محمدنعیم، حبیب اللہ، نقیب اللہ، حبیب اللہ اور پائندہ محمد نے حقائق کا ادراک کرتے ہوئے مخالفت سے دستبرداری کا اعلان کیا۔

Related posts