دسمبر 01, 2020

مراکز پر حملے: ٹینک وگاڑیاں تباہ، 29 ہلاک وزخمی، 24 سرنڈر

مراکز پر حملے: ٹینک وگاڑیاں تباہ، 29 ہلاک وزخمی، 24 سرنڈر

سرپل، قندہار، ہرات، ہلمند، غور، زابل اور بادغیس صوبوں میں امارت اسلامیہ کے مجاہدین نے کٹھ پتلی فوجوں کے مراکز اور کاروان کو نشانہ بنایا۔

تفصیلات کے مطابق سنیچر کے رات دو بجے کے لگ بھگ صوبہ سرپل ضلع گوسفندئی کے آقگنبد کے علاقے میں اہم یونٹ پر اور دفاعی چوکیوں پر حملہ ہوا، جس سے ایک اہلکار ہلاک اور 4 زخمی ہوئے۔

رپوٹ کے مطابق سنیچر کے روز صبح کے وت سات بجے کے لگ بھگ صوبہ قندہار ضلع میوند کے بند تیمور کے علاقے میں ہونے والے بم دھماکہ سے ٹینک تباہ اور اس میں سوار اہلکار ہلاک وزخمی ہوئے۔

دوسری جانب جمعہ کے روز عصر چار بجے کے لگ بھگ ضلع ارغستان کے جھانگیر کے علاقے میں آپریشن کرنے والے دشمن پر حملہ ہوا، جس سے 2 اہلکار ہلاک ہوئے۔

آمدہ رپوٹ کے مطابق سنیچر کے روز صبح کے وقت صوبہ ہرات ضلع شینڈنڈ کے کاریز بی بی کے علاقے میں بم دھماکہ سے ٹینک تباہ اور اس میں سوار 2 اہلکار ہلاک، جبکہ ایک زخمی ہوا۔

موصولہ رپوٹ کے مطابق جمعہ کے روز عصر کے چار بجے کے لگ بھگ صوبہ ہلمند ضلع ناوہ کے سرخدوز دشت کے علاقے میں کاروان پر حملہ ہوا، جس سے گاڑی تباہ اور اس میں سوار اہلکار ہلاک ہوئے۔

دوسری جانب صوبائی دار الحکومت لشکرگاہ شہر کے حلقہ نمبر نو، حلقہ نمبر سات اور حلقہ نمبر تین کے علاقوں میں سنیچر کے روز صبح کے وقت حملہ ہوا، جس سے 2 فوجی ہلاک، جبکہ 2 زخمی ہوئے۔

اسی طرح سنیچر کے رات عشاء کے وقت آٹھ بجے کے لگ بھگ ضلع نادعلی کے کوچیانوں کے علاقے میں واقع چوکیوں پر لیزر گن حملے کے نتیجے میں 2 فوجی زخمی ہوئے۔

اطلاع کے مطابق جمعہ کے روز صوبہ غور ضلع تیورہ کے جوز کے علاقے میں دشمن پر حملہ ہوا، جس سے ایک جنگجو زخمی، جبکہ دیگر نے فرار کی راہ اپنالی۔

آمدہ اطلاع کے مطابق سنیچر کے روز دو پہر گیارہ بجے کے لگ بھگ صوبہ زابل ضلع شہر صفا میں دشمن پر حملہ وہا، جس سے ٹینک ورینجر گاڑی تباہ اور ان میں سوار اہلکاروں کو ہلاکتوں کا سامنا ہوا۔

موصولہ اطلاع کے مطابق سنیچر کے رات صوبہ بادغیس ضلع آبکمرئی کے تگاب رباط کے علاقے میں دشمن سے جھڑپیں ہوئیں، جس سے کمانڈر محافظ سمیت ہلاک ہوا۔

یاد رہے کہ مجاہدین نے 2 کلاشنکوف غنیمت کرلیا۔

دوسری جانب سنیچر کے رات عشاء کے وقت سات بجے کے لگ بھگ ضلع قادس کے مرکز اور دفاعی چوکیوں پر مجاہدین نے حملہ کیا، جس سے 3 اہلکار ہلاک، 8 زخمی اور دشمن کے فائرنگ سے 2 مجاہدین زخمی، ایک شہید ہوا۔ تقبلہ اللہ تعالی

ذرائع کے مطابق صوبہ ہلمند کے صدر مقام لشکرگاہ شہر کے حلقہ نمبر چار کے باباجی کے علاقے میں پانچ پولیس اہلکار (شریف الله ولد خدایرام، سید محمد ولد حاجي حقداد، نصیر احمد ولد محمد جان، محمد داود ولد موسی جان اور اغا لالا ولد محمد هاشم) مجاہدین سے آملے۔

دوسری جانب ضلع نادعلی میں 10 اہلکار میراتم ولد عصمت اللہ، عبد المحمد ولد اختر محمد، عزت الله ولد میر احمد، نعمت الله ولد ابراهیم، غلام محمد ولد عبد الخالق، حضرت الله ولد عبد العزیز، جان محمد ولد خیال محمد، اختر جان ولد امیر محمد، خیر محمد ولد اسماعیل، حمید الله ولد ماجدي نے حقائق کا ادراک کرتے ہوئے مجاہدین کے سامنے ہتھیار ڈالے۔

رپوٹ کے مطابق صوبہ فاریاب ضلع المار کے نوغیلئی کے علاقے میں ایک جنگجو خیر الدین ولد علاؤ الدین مجاہدین سے آملا۔

آمدہ اطلاع کے مطابق جمعہ کے روز سہ پہر کے وقت صوبہ بادغیس ضلع جوند میں ایک فوجی سلطان ولد عبد الوھاب نے مجاہدین کی مخالفت سے دست برداری کا اعلان کیا۔

موصولہ رپوٹ کے مطابق صوبہ ہرات ضلع پشتون زرغون میں 9 پولیس وجنگجوؤں (عبد الجبار ولد حاجي عبد القادر، محمد داود ولد عبد الحکیم، وکیل احمد ولد عبد الصمد، جلیل احمد ولد عبد البصیر، عبد الکریم ولد عبد الظاهر، یار محمد ولد پاینده، رحیم شاه ولد غلام ربانی، عبد الصبور ولد جمعه اور ناصر ولد حاجی جمعه) نے مجاہدین کے سامنے ہتھیار ڈالے۔

Related posts