نومبر 29, 2020

کاروائیاں: چوکی فتح، 9 ٹینک وگاڑیاں تباہ، 75 اہلکار ہلاک وزخمی

کاروائیاں: چوکی فتح، 9 ٹینک وگاڑیاں تباہ، 75 اہلکار ہلاک وزخمی

هرات، کندهار، روزګان، ھلمند، بادغیس، نیمروز وزابل صوبوں میں چوکیوں وکٹھ پتلی فوجیوں پر حملہ ہوا۔

تفصیلات کے مطابق جمعرات کے روز صبح کے وقت صوبہ ہرات ضلع پشتون زرغون کے دی شیخ کے علاقے میں آپریشن کرنے والے دشمن پر حملے کے نتیجے میں 4 ٹینک تباہ، 20 اہلکار ہلاک، جبکہ 10 مزید زخمی ہوئے۔

یاد رہے کہ دشمن کے فائرنگ سے ایک مجاہد زخمی، جبکہ دوسرا شہید ہوا۔ تقبلہ اللہ تعالی

دوسری جانب جمعرات کے روز دن دس بجے کے لگ بھگ ضلع شینڈنڈ میں مجاہدین نے 3 فوجیوں (سید یوسف ولد سید عبد الرزاق، حمایت اللہ ولد عبد الظاہر اور عبید اللہ ولد سلطان عزیز) کو اسلحہ سمیت گرفتار کرکے ان کے مقدمہ شرعی عدالت کے حوالے کردیا۔

اسی طرح جمعرات کے رت ضلع گزرہ کے باتور گاؤں کے علاقے میں مجاہدین ایک جنگجو شراف کلاشنکوف سمیت گرفتار کرکے ان کے مقدمہ شرعی عدالت کے حوالے کردیا۔

رپوٹ کے مطابق جمعرات کے رات عشاء کے وقت سات بجے کے لگ بھگ صوبہ قندہار کے صدر مقام قندہار شہر کے حلقہ نمبر چار کے علاقے میں واقع چوکی پر حملے کے نتیجے میں کمانڈر سمیت سات اہلکار ہلاک وزخمی ہوئے۔

دوسری جانب جمعرات کے رات عشاء کے وقت نو بجے کے لگ بھگ ضلع خاکریز کے چنار کے علاقے میں لیزر گن حملے کے نتیجے میں 2 فوجی ہلاک ہوئے۔

اسی طرح جمعرات کے روز دو پہر بارہ بجے کے لگ بھگ ضلع میانشین کے مرکز میں واقع دفاعی چوکی کے قریب ہونے والے بم دھماکہ سے 4 اہلکار ہلاک ہوئے۔

رپوٹ کے مطابق جمعرات کے رات عشاء کے وقت ضلع پنجوائی کے سلاوات کے علاقے میں واقع چوکی پر حملہ ہوا، جس سے چوکی فتح، پانچ اہلکار ہلاک، 6 گرفتار، 3 رینجر گاڑیاں تباہ، جبکہ مجاہدین نے ایک ٹینک اور 10 عدد اسلحہ غنیمت کرلیا۔

آمدہ رپوٹ کے مطابق صوبائی دار الحکومت قندہار شہر کے یخ کاریز کے علاقے میں مسلحانہ کاروائی کے نتیجے میں آفسر ہلاک ہوا۔

اطلاع کے مطابق بدھ کے روز دو پہر گیارہ بجے کے لگ بھگ ضلع شاولیکوٹ کے مرکز میں واقع چوکی پر حملہ ہوا، جس سے چوکی فتح، 4 اہلکار ہلاک، جبکہ دیگر نے فرار کی راہ اپنال۔

آمدہ رپوٹ کے مطابق جمعرات کے رات دس بجے کے لگ بھگ صوبہ روزگان کے صدر مقام ترینکوٹ شہر کے نچین کے علاقے میں واقع چوکی پر حملہ ہوا، جس سے چوکی منھدم، 4 اہلکار ہلاک، جبکہ دیگر نے فرار کی راہ اپنالی۔

موصولہ رپوٹ کے مطابق جمعرات کے رات عشاء کے وقت نو بجے کے لگ بھگ صوبہ ہلمند ضلع سنگین کے پیچ کے علاقے میں دشمن پر حملہ ہوا، جس سے 3 اہلکار ہلاک اور مجاہدین نے 2 کارمولی بندوق غنیمت کرلیا۔

دوسری جانب بدھ کے رات ضلع نادعلی کے کوچیانوں کے علاقے میں واقع چوکیوں پر لیزر گن حملے کے نتیجے میں 4 اہلکار ہلاک اور مجاہدین نے ایک کارمولی بندوق غنیمت کرلیا۔

اسی طرح جمعرات کے روز صبح نو بجے کے لگ بھگ ضلع واشیر کے شنگیلان کے علاقے میں ہونے والے بم دھماکہ سے کاماز گاڑی تباہ اور اس میں سوار اہلکاروں کو ہلاکتوں کا سامنا ہوا۔

ذرائع کے مطابق بدھ کے روز شام چھ بجے کے لگ بھگ صوبائی دار الحکومت لشکرگاہ شہر کے حلقہ نمبر سات کے علاقے میں لیزر گن سے ایک فوجی ہلاک ہوا۔

آمدہ اطلاع کے مطابق جمعرات کے روز سہ پہر ایک بجے کے لگ بھگ صوبہ بادغیس ضلع مقر کے سنجیدک کے علاقے میں واقع دفاعی چوکی پر حملہ ہوا، جس سے دشمن کو ہلاکتوں کا سامنا ہوا۔

موصولہ رپوٹ کے مطابق جمعرات کے روز صبح آٹھ بجے کے لگ بھگ صوبہ نیمروز ضلع دلارام کے اسحاقزوں کے علاقے میں ہونے والے بم دھماکہ سے کاماز گاڑی تباہ اور اس میں سوار اہلکار ہلاک ہوئے۔

جہادی ذرائع کے مطابق صوبہ زابل ضلع شہر صفا کے خانیزوں کے علاقے میں دشمن پر حملہ ہوا، جس سے 4 اہلکار ہلاک اور 3 وزخمی ہوئے۔

رپوٹ کے مطابق بدھ کے روز صبح کے وقت صوبہ روزگان ضلع دھراود کے لبلان کے علاقے میں 3 اہلکار 3 کارمولی بندوق سمیت مجاہدین سے آملے۔

موصولہ اطلاع کے مطابق جمعرات کے رات صوبہ بادغیس کے آبکمرئی اور سنگ آتش اضلاع میں 4 اہلکار محمد باور ولد عبد الخالق، عبد السمیع ولد عبد الغنی، عبد الرحمن ولد رمضان اور محمد ولد ابراھیم نے مجاہدین کے سامنے ہتھیار ڈالے۔

Related posts