دسمبر 01, 2020

پل چرخی جیل میں قیدیوں کو درپیش خطرات کے بابت امارت اسلامیہ کا انتباہ

پل چرخی جیل میں قیدیوں کو درپیش خطرات کے بابت امارت اسلامیہ کا انتباہ

امارت اسلامیہ کےخفیہ ادارے کی اطلاع کی بنیاد پر داعش ملیشا کے چند کارندے کابل انتظامیہ کی اینٹلی جنس ایجنسی کے تعاون اور رہنمائی سے پل چرخی جیل کے حراستی بلاک میں امارت اسلامیہ  سے وابستہ قیدیوں پر حملے کا ارادہ رکھتا ہے۔

اس گھناؤنے مقصد کے لیے خاص ہتھیار جیل پہنچایا گیا ہے اور دیگر لوازم بھی ان کے اختیار میں دیا گیا ہے۔

اس حوالے سے امارت اسلامیہ سنگین تنبیہ دیتی ہے کہ اگر جیل میں ہمارے قیدی کو کسی کی جانب سے نقصان پہنچا، اس کی ذمہ داری کابل انتظامیہ پر ہوگی۔

ماضی میں بھی ہمیں رپورٹیں ملی تھی کہ کابل انتظامیہ اینٹلی جنس  ایجنسی اپنے ناجائز مقاصد کے حصول کی خاطر  داعش ملیشا  کو بار بار استعمال کررہا  ہے۔جلال آباد جیل پر حملہ، کابل یونیورسٹی پر حالیہ حملہ، کوثر تعلیمی مرکز پر حملہ، بعض علماء، ماہرین، صحافیوں اور سماجی کارکنوں پر حملے ایسی سازش کا حصہ ہے۔

امارت اسلامیہ کو اپنے قیدیوں کے تحفظ پر شدید تشویش ہے،اس بارے میں تمام ذمہ دار فریقین کو آگاہ رہنا چاہیے۔

ذبیح اللہ مجاہد ترجمان امارت اسلامیہ

یکم ربیع الثانی 1442 ھ بمطابق 16 نومبر 2020 ء

Related posts