نومبر 29, 2020

ٹینک گاڑیاں تباہ، فتوحات، کمانڈروں سمیت 69 ہلاک و زخمی

ٹینک گاڑیاں تباہ، فتوحات، کمانڈروں سمیت 69 ہلاک و زخمی

 

نیویارک اور واشنگٹن کے محافظوں پر امارت اسلامیہ کے مجاہدین نے کابل، ننگرہار، غزنی، میدان، کنڑ، پروان، بلخ، قندوز، نورستان، پکتیکا اور بغلان صوبوں میں حملہ کیا۔

تفصیل کے مطابق صوبہ کابل ضلع پغمان کے چونغر کے علاقے میں چوکی پر مجاہدین نے حملہ کیا،جس میں 6 اہلکار ہلاک و زخمی ہوئے اور کچھ دیر بعد اینٹلی جنس سروس اہلکار دس گاڑیوں میں پہنچے،جنہیں مجاہدین کی کمین گاہ کا سامنا ہوا، جس کے نتیجے میں گاڑیوں کو نقصان پہنچنے کے علاوہ 8 اہلکار بھی ہلاک و زخمی ہوئے۔

دوسری جانب صوبہ ننگرہار ضلع شیرزاد کے گندمک کے علاقے میں چوکیوں پر ہونے والے حملے میں 7 اہلکارہلاک، 4 زخمی اور ثمرخیل کے علاقے میں بم دھماکہ سے فوجی ٹینک تباہ اور اس میں سوار اہلکار ہلاک وزخمی ہوئے۔

واضح رہےکہ لڑائی کے دوران ایک مجاہد شہید اور 2 زخمی ہوئے۔ تقبلہ اللہ تعالی

اسی طرح صوبہ غزنی کے صدر مقام غزنی شہر کے روضہ کے علاقے میں کچھ دیر بم دھماکہ سے فوجی ٹینک تباہ اور اس میں سوار 5 اہلکار لقمہ اجل بن گئے۔

ذرائع کے مطابق صوبہ میدان ضلع چک کے دوراہی کے علاقے میں مجاہدین کے حملے میں 4 فوجی ہلاک اور 3 زخمی ہونے کے علاوہ مجاہدین نے اشیاءخوردونوش بھی قبضے میں لیا۔

رپورٹ کے مطابق صوبہ کنڑ ضلع اسمار کے شال کے علاقے میں بم دھماکہ سے کمانڈر سمیت 3 اہلکار ہلاک ہوئے اور صوبہ پروان ضلع بگرام کے پنج قلعہ کے علاقے میں مجاہدین کے حملے میں رینجر گاڑی تباہ، اس میں سوار 2 پولیس اہلکار ہلاک اور 2 زخمی ہوئے،جب کہ صوبہ بلخ کے صدرمقام مزارشریف شہر کے کمربند کے قریب مجاہدین نے پولیس اہلکار کو قتل کردیا اور ضلع دولت آباد کے مرکز پر سنائیپرگن حملے میں پولیس کمانڈر فاضل سمیت 3 زخمی ہوئے۔

اطلاعات کے مطابق صوبہ قندوز کےصدرمقام قندوز شہر کے سہ درک کے علاقے میں  حکمت عملی کے تحت ہونے والے دھامہ سے کمانڈر اول میر سمیت دو اہلکار زخمی ہوئے،اسی طرح زرخرید کے علاقے اتمانزئی کے مقام پر مجاہدین کے حملے میں ایک جنگجو ہلاک اور ان کی کلاشنکوف کو قبضے میں لیااور ضلع خان آباد کے نوآباد کے علاقے میں مجاہدین نے صبح کے وقت وسیع کاروائی کا آغاز کیا، جس کے نتیجے میں اللہ تعالی کی نصرت سے ایک فوجی یونٹ، 4 چوکیاں فتح، درجنوں اہلکار ہلاک و زخمی اور فرار ہوئے ۔جب کہ صوبہ نورستان ضلع دوآب کے دہن پیار کے علاقے میں مجاہدین نے دو سیکورٹی اہلکاروں ثناءاللہ اور یحی کو گرفتار کرلیا۔

نیز صوبہ پکتیکا ضلع زیڑوک کے مرکز کے قریب پیدل دستوں پر ہونے والے دھماکہ سے 4 اہلکار ہلا ک اور 2 زخمی ہوئےاور ضلع سرحوضہ کے شاتور کے علاقے میں اسی نوعیت دھماکہ سے پولیس ٹینک تباہ اور اس میں سوار وحشی کمانڈر خالد سمیت 4 اہلکار ہلاک ہوئے۔

رپورٹ کے مطابق صوبہ بغلان ضلع پل خمری کے شہرنو کے علاقے میں رات کے وقت مجاہدین نے کمانڈو کے قافلے پر حملہ کیا،جس میں 3 اہلکار ہلاک، 6 زخمی او ر2 ٹینک بھی تباہ ہوئے۔

Related posts