نومبر 29, 2020

قندوز و ننگرہار فتوحات، اعلی حکام سمیت 24 ہلاک، غنائم

قندوز و ننگرہار فتوحات، اعلی حکام سمیت 24 ہلاک، غنائم

کٹھ پتلی فوجوں کی چوکیوں اور کاروان پر امارت اسلامیہ کے مجاہدین نے قندوز اور ننگرہار صوبوں میں حملہ کیا۔

آمدہ اطلاعات کے مطابق جمعرات اور جمعہ کی درمیانی شب صوبہ قندوز ضلع امام صاحب کے اسماعیل قشلاق کے علاقے میں سپیشل فورس مجاہدین کے خلاف آپریشن کرنے جارہےتھے،جنہیں شدید مزاحمت کا سامنا ہوا اور لڑائی چھڑگئی، جس کے نتیجے میں  10 اہلکار ہلاک، کمانڈر سمیت 5 زخمی اور 3 ٹینک تباہ ہوئے۔دریں اثنا ضلع خان آباد کے مربوطہ علاقے قندوز-تخار ہائی وے پر  واقع دو چوکیاں مجاہدین کے حملے میں تباہ، دو آفسروں مرتضی اور برکت سمیت 3 اہلکار ہلاک، کمانڈر کے ہمراہ 5 زخمی ہوئے، جب کہ ضلع دشت آرچی کے قندوز بندر کے علاقے میں  فوجی کاروان پر ہونے والے حملے میں دو ٹینک تباہ ، 7 اہلکار ہلاک ہوئے اور مجاہدین نے اسلحہ وغیرہ بھی قبضے میں لیا۔

صوبہ ننگرہار سے موصولہ رپورٹ کے مطابق ضلع سرخ رود کے شمس پور کے علاقے میں چوکیوں پر مجاہدین کے حملوں کے دوران 2 چوکیاں فتح اور وہاں تعینات اہلکاروں میں سے 2 ہلاک، 4 زخمی، دیگر فرار اور مجاہدین نے کافی مقدار میں اسلحہ قبضے میں لیا۔اسی طرح ضلع خوگیانی کے نکڑخیل کے علاقے میں گدام قلعہ نامی چوکی مجاہدین کے مسلسل حملوں کے دوران جنگجو فرار اور علاقے پر مجاہدین کا کنٹرول ہے۔ نیز ضلع حصارک کے جبی کے علاقے میں مجاہدین کے حملے میں 2 فوجی ہلاک ہوئے، جب کہ ضلع دہ بالا کے اکاخیل بازار کے مقام پر چوکی پر ہونے والے حملے میں 2 زخمی ہوئے۔

Related posts