نومبر 29, 2020

آپریشن، فتوحات،5ٹینک گاڑیاں تباہ، 16ہلاک و زخمی

آپریشن، فتوحات،5ٹینک گاڑیاں تباہ، 16ہلاک و زخمی

الفتح آپریشن کے سلسلے میں امارت اسلامیہ کے مجاہدین نے بغلان، جوزجان، پکتیا، کنڑ اور خوست صوبوں میں دشمن کے مراکز اور کاروان پر حملہ کیا۔

اطلاعات کے مطابق چند روز سے مجاہدین  صوبہ بغلان ضلع نہرین کے سقاویان کے علاقے میں کمانڈر علامیر کی چوکیوں اور مورچوں پر  حملہ کرتے رہے،جس کے نتیجے میں اللہ تعالی سے ایک فوجی یونٹ،سقاوہ بالا، سقاوہ پاین، باغ بالا، مزار، کوہ بغر، مزار نامی وسیع علاقوں سے دشمن فرار ہوا۔

دوسری جانب صوبہ جوزجان کے صدر مقام شبرغان شہر کے تپہ بیزگک کے علاقے میں مجاہدین کے حملے میں دو ٹینک تباہ، 2 اہلکارہلاک، 5 زخمی ہونے کے علاوہ مجاہدین نے ایک ہوی مشین گن، ایک ہینڈگرنیڈ، 3 کلاشنکوفیں اور دیگر فوجی سازوسامان غنیمت کرلی۔

صوبہ پکتیا سے اطلاع ملی ہےکہ ضلع جانی خیل کے رباط کے علاقے میں بم دھماکہ سے ایک فوجی ہلاک، جب کہ ضلع احمدآباد کے موس خیل کے علاقے میں مجاہدین نے گلاب خان نامی مخبر کو قتل کردیا اور ضلع سمکنی کے پیرگاؤں کے مقام پر دھماکہ سے 4 جنگجو زخمی ہوئے۔اسی طرح ضلع زرمت کے ہستوگنہ کے علاقے میں دو ٹینک تباہ، دشمن کو ہلاکتوں کا سامنا ہوا اور صدر مقام گردیز شہر کے ابراہیم خیل  کے علاقے میں فوجی کاروان پر ہونے والے حملے میں ایک رینجرگاڑی تباہ ہوئی،لیکن ہلاکتوں سے متعلقہ اطلاع فراہم نہ ہوسکی۔

رپورٹ کے مطابق صوبہ کنڑ ضلع مانوگی کے بارکنڈی کے علاقے میں مجاہدین کے حملے میں 2 فوجی ہلاک ہوئے اور صوبہ خوست ضلع صبری کے خلبسات کے مقام پر چوکی پرہونے والے حملے میں ایک فوجی کی ہلاکت کی اطلاع ملی۔

Related posts