نومبر 23, 2020

مجاہدین کا آپریشن: مراکز فتح، 46 اہلکار ہلاک، 22 سرنڈر، کافی اسلحہ غنیمت

مجاہدین کا آپریشن: مراکز فتح، 46 اہلکار ہلاک، 22 سرنڈر، کافی اسلحہ غنیمت

 

زابل، نیمروز، قندہار، ہرات وبادغیس صوبوں میں مجاہدین نے دشمن کو نشانہ بنایا۔

اطلاعات کے مطابق پیر کے رات صوبہ زابل ضلع شملزئی کے جنجیر کے علاقے میں واقع چوکی پر حملہ ہوا، جس سے چوکی فتح، سات اہلکار ہلاک، جبکہ 2 مزید زخمی ہوئے۔

دوسری جانب اتوار کے روز دن دس بجے کے لگ بھگ صوبہ زابل ضلع میزان کے حسنخیل کے علاقے میں ہونے والے بم دھماکہ سے 3 اہلکار ہلاک، جبکہ 4 مزید زخمی ہوئے۔

رپوٹ کے مطابق پیر کے رات تین بجے کے لگ بھگ صوبہ نیمروز ضلع خاشرود کے منار کے علاقے میں واقع چوکی پر لیزر گن حملہ ہوا، جس سے 4 فوجی ہلاک، جبکہ 2 مزید زخمی ہوئے۔

یاد رہے کہ دشمن کے فائرنگ سے ایک مجاہد زخمی ہوا۔

اطلاع کے مطابق پیر کے رات تین بجے کے لگ بھگ صوبہ قندہار ضلع سپین بولدک کے ناوہ کے علاقے میں واقع چوکی پر حملہ ہوا، جس سے چوکی فتح، رینجر گاڑی تباہ، سات اہلکار ہلاک، ایک گرفتار، جبکہ مجاہدین نے 2 ایم ایم 82 توپ، ایک راکٹ لانچر، پانچ کارمولی اور 2 کلاشنکوفوں سمیت مختلف النوع فوجی سازوسامان غنیمت کرلیا۔

آمدہ رپوٹ کے مطابق پیر کے رات دس بجے کے لگ بھگ صوبہ ہرات ضلع کھسان کے اسلام قلعہ کے بازار کے علاقے میں آپریشن کرنے والے دشمن پر حملہ ہوا، جس سے 2 ٹینک تباہ، 13 کمانڈوز ہلاک، 4 زخمی، جبکہ دیگر نے فرار کی راہ اپنالی۔

واضح رہے کہ مجاہدین نے پانچ کارمولی اور رات ولے دوبین غنیمت کرلیا۔

یاد رہے کہ دشمن کے فائرنگ سے ایک مجاہد زخمی ہوا۔

ذرائع کے مطابق پیر کے رات عشاء کے وقت سات بجے کے لگ بھگ صوبہ بادغیس ضلع قادس کے قرچغ کے علاقے میں واقع یونٹ پر مجاہدین نے حملہ کیا، جس سے 12 اہلکار ہلاک، 8 زخمی، جبکہ دشمن کے فائرنگ سے 2 مجاہدین زخمی اور ایک شہید ہوا۔ تقبلہ اللہ تعالی

موصولہ تفصیل کے مطابق صوبہ روزگان ضلع دھراود میں گزشتہ تین روز میں 16 پولیس اور جنگجوؤں نے حقائق کا ادراک کرتے ہوئے مجاہدین کے سامنے ہتھیار ڈالے۔

جن میں شیرآغا ولد عبد الصمدآغا، باچاه ولد جمه خان، روزي خان ولد ملا میر حمزه، ښائسته گل ولد گل محمد، نعیم ولد تور جان، شیر علي ولد شاولي، محمد عیوض ولد امان الله، مطیع الله ولد هاشم جان، سردار محمد ولد محمد میر، عتیق الله ولد زرین، نور آغا ولد عبد السلام، دولت خان ولد غلام نبي، آغا ولي ولد نبو، سات محمد ولد راز محمد، نجیب الله ولد آغا محمد، نسیم ولد آمان الله شامل ہے۔

دوسری جانب صوبائی دار الحکومت ترینکوٹ شہر میں بھی 2 پولیس دل اغا ولد عبد القوی اور نور محمد ولد عبد الباری نے مجاہدین کی مخالفت سے دست برداری کا اعلان کیا۔

موصولہ اطلاع کے مطابق صوبہ فاریاب ضلع قیصار میں 2 جنگجو محمد عمر ولد غلام محمد اور نصر ولد سلیم مجاہدن سے آملے۔

رپوٹ کے مطابق اتوار کے روز دو پہر کے وقت صوبہ بادغیس ضلع جوند میں ایک پولیس مظلوم ولد اکبر مجاہدین سے آملا۔

اسی طرح پیر کے روز صبح کے وقت صوبہ ہرات ضلع شینڈنڈ میں ایک اور فوجی سید نعیم ولد سید احمد اور حکمت اللہ ولد سراج الدین بھی مجاہدین سے آملے۔

Related posts