نومبر 23, 2020

مجاہدین کے تابڑتوڑ حملے، کمانڈرسمیت 25ہلاک، غنائم

مجاہدین کے تابڑتوڑ حملے، کمانڈرسمیت 25ہلاک، غنائم

سیکورٹی فورسز کے مراکز، چوکیوں اور کاروان پر امارت اسلامیہ کے مجاہدین نے بغلان، بدخشان، کاپیسا، پکتیکا، پروان،جوزجان اور میدان صوبوں میں حملہ کیا۔

تفصیل کے مطابق صوبہ بغلان ضلع خوست کے قلعہ حاکمی اور بہارک کے مفتوحہ علاقوں پر کٹھ پتلی افواج نے حملہ کرنے کی کوشش کی، جنہیں شدید مزاحمت کا سامنا ہوا،جس کے نتیجے میں اللہ تعالی کی نصرت سے دشمن پسپا اور 3 فوجی ہلاک جب کہ 6 زخمی ہوئے۔

دوسری جانب دو روز سے صوبہ بدخشان کے صدر مقام فیض آباد شہر کے حلقہ نمبر9 کے مربوطہ دہ بالا کے علاقے میں فوجی مراکز اور چوکیوں پر حملہ کیا، جس میں 9 اہلکار ہلاک، 10 زخمی اور 3 ٹینک اور گاڑیاں بھی تباہ ہوئیں۔

رپورٹ کے مطابق صوبہ پکتیکا ضلع یوسف خیل کے مرکز کے قریب مجاہدین کے حملے میں 2 فوجی ہلاک، ان کی دو کلاشنکوفیں غنیمت، جب کہ ضلع سرحوضہ  کے سلطان کے علاقے میں چوکی پر ہونے والے حملے میں ایک جنگجو ہلا ک اور ضلع اورگون پیرکوٹی کے علاقے شیخان کے مقام پر پولیس چوکی کے قریب حکمت عملی کے تحت ہونے والے دھماکہ نے 2 پولیس اہلکاروں کی جان لی۔اسی طرح ضلع سروبی کے زڑہ قلعہ کے علاقے میں مجاہدین کے حملے میں ایک پولیس ہلاک او رایک زخمی ہوا۔

اسی طرح صوبہ پروان ضلع بگرام کے شاکا کے علاقے میں صوبہ کاپیسا کے سبزروند کمانڈر قاضی احمدی کی گاڑی دھماکہ سے تباہ اور اس میں سوارکمانڈر 2  محافظوں سمیت زخمی ہوئے۔

صوبہ جوزجان سے اطلاع ملی ہےکہ صدر مقام شبرغان شہر کے ترکمن قندوق کے علاقے میں فوجی مرکز پر ہونے والے حملے میں جنگجوکمانڈر اعظم سمیت 5 شرپسند ہلاک ہوئے اور مجاہدین نے 2 کلاشنکوفیں بھی قبضے میں لیا۔

نیز صوبہ میدان ضلع دایمرداد کے ہزارہ گان کے علاقے میں چوکی پر مجاہدین نے حملہ کیا، جس میں 2 فوجی ہلاک جب کہ متعدد زخمی ہوئے۔

Related posts