اکتوبر 24, 2020

گورنرسکریٹری، کمانڈر وں و آ‌فسر سمیت 43 ہلاک

گورنرسکریٹری، کمانڈر وں و آ‌فسر سمیت 43 ہلاک

کابل کٹھ پتلی انتطامیہ کے اعلی حکام اور سیکورٹی فورسز کو امارت اسلامیہ کے مجاہدین نے کابل، پروان، بلخ، پکتیا، کاپیسا، غزنی، لوگراور  سمنگان صوبوں میں نشانہ بنایا۔

اطلاعات کے مطابق سنیچر کےروز صبح کے وقت صوبہ پروان ضلع سالنگ کے للمہ سبزک کے علاقے میں بم دھماکہ فوجی رینجر گاڑی تباہ اور اس  میں سوار کمانڈر سمیت 4 اہلکار ہلاک اور انسداد دہشت گردی آفسر کے ہمراہ 2 زخمی ہوئے۔

صوبہ بلخ سے موصولہ رپورٹ کے مطابق سنیچر کےروز صبح کے وقت صدرمقام مزارشریف شہر کے قریب مجاہدین نے سفاک جنگجو کمانڈر عبدالغفور ذاکر کو قتل کردیا اور ضلع زارع میں چوکی پر ہونے والے حملے میں 2 فوجی ہلاک، جب کہ ضلع خاص بلخ کے باغ عارق کے علاقے میں چوکی پر حملے کے دوران 3 جنگجو ہلاک اور 3 زخمی ہوئے۔اسی طرح ضلع کلدار کے مربوطہ علاقے میں چوکی پرمجاہدین کے حملے میں 4 پولیس اہلکار ہلاک اور 3 زخمی ہوئے۔

رپورٹ کے مطابق صوبہ لوگر کےصدرمقام پل عالم شہر کے قریب مجاہدین نے انیٹلی جنس سروس اہلکار اجمل کو قتل کردیا،علی خان قلعہ کے علاقے میں بم دھماکہ سے ایک جنگجوہلاک،پورک کے مقام پر اسی نوعیت دھماکہ نے2 جنگجوؤں کی جان لی،کنجک کے مقام پر مجاہدین کے حملے میں 2 فوجی ہلاک اور پولیس ہیڈکوارٹر مجاہدین نے میزائل داغے، جو اہداف پر گریں، لیکن تفصیل فراہم نہ ہوسکی۔اسی طرح ضلع محمدآغہ کے کتب خیل کے علاقے میں مجاہدین کے سنائیپرگن حملے میں 2 فوجی ہلاک،  جب کہ ضلع خوشی کے بلادی کے علاقے چوکی پر لیزرگن حملے میں 4 فوجی ہلاک ہوئے۔

دوسری جانب صوبہ غزنی کے صدرمقام غزنی شہر کے روضہ کے علاقے میں مجاہدین نے نام نہاد صوبائی گورنر کے دفتر کے سیکریٹری سمیع اللہ کو محافظ تمیم کے ہمراہ قتل کردیا اور ضلع دہ یک کے تاسن کے علاقے میں مجاہدین کے حملے میں ایک فوجی ہلاک اور ایک زخمی ہوا۔

اسی طرح صوبہ کاپیسا ضلع حصہ دوئم کے قاضی خیل کے علاقے میں مجاہدین نے کمانڈو کے کاروان پر شدید حملہ کیا، جس میں 4 اہلکار ہلاک اور 6 زخمی ہوئے۔

نیز صوبہ پکتیا کے صدرمقام گردیز شہر کے ابراہیم خیل اور تیراہ کے علاقوں میں مجاہدین کے حملے میں دو گاڑیاں تباہ، 4 فوجی ہلاک ، جب کہ ضلع پھٹان کے انزرگی کے علاقے میں چوکی پر حملے میں ایک فوجی مارا گیا۔

رپورٹ کے مطابق صوبہ سمنگان ضلع حضرت سلطان کے درہ کلان کے علاقے میں چوکی پر ہونے والے حملے میں 3 پولیس اہلکار ہلاک ہوئے اور صوبہ کابل ضلع شکردرہ کے سیاہ سنگ کے علاقے میں مجاہدین نے گلاجان نامی مخبر کو قتل کردیا، جب کہ پل چرخی کے علاقے میں سپیشل فورس اہلکار کو مجاہدین کے موت کے گھاٹ اتار دیا۔

Related posts